پاکستان اور افغانستان میں اب بھی القاعدہ موجود ہے،امریکی کمانڈر

اسٹاف رپورٹ
واشنگٹن : امریکا کی اسپیشل آپریشنز کمانڈ نے افغانستان سے مکمل انخلاء کو خطرناک قرار دے دیا۔ کمانڈر  ویلیم مکراوین کا کہنا ہے پاک افغان قبائیلی علاقوں میں القاعدہ کا خطرہ موجود ہے۔

ایوان نمائندگان کی آرمڈ سروسز کمیٹی کو ویلیم مک راون نے اپنے خدشات سے آگاہ کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر افغانستان سے مکمل انخلا کیا جاتا ہے اور اسپیشل آپریشنز کمانڈ بھی وہاں سے نکل جاتی ہے تو خطرات سے نمٹنا مشکل ہوجائے گا۔

انہوں نے کمیٹی کو بتایا کہ پاکستان کے قبائیلی علاقوں کے ساتھ افغان صوبہ کنڑ اور نورستان میں القاعدہ کے دوبارہ پروان چڑھنے کا خطرہ ہے، تاہم انخلا سے متعلق امریکی صدر کے ہر فیصلے پر عمل درآمد کے لئے تیار ہیں۔

ایبٹ آبادآپریشن کی نگرانی کرنے والے امریکی کمانڈرایڈمرل ولیم میک ریون نے امریکا کی آرمد سروسزکمیٹی میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں القاعدہ کی قیادت انتہائی کمزور ہوچکی ہے تاہم پاکستان کے قبائلی علاقوں اور افغانستان کے صوبوں کنڑ اور نورستان میں القاعدہ موجود ہے، اگر خصوصی کارروائیوں کے لیے کوئی دستہ نہ رکھا گیا تو القاعدہ دوبارہ فعال ہوسکتی ہے۔ سماء

PAT

Gujrat

female

Tabool ads will show in this div