گجرات کے مسلمانوں کے قاتل نریندر مودی کی نئی ہرزہ سرائی

اسٹاف رپورٹ

نئی دہلی : بھارتيہ جنتا پارٹی کی جانب سے وزارت عظمیٰ کے اميدوار نريندر مودی کہتے ہیں کسی کو خوش کرنے کیلئے مسلمانوں کی ٹوپی نہيں پہن سکتا، وہ گجرات مسلم کش فسادات پر معافی مانگنے پر بھی انکاری ہيں۔

نريندر مودی نے گجرات فسادات پر معافی مانگنے سے انکار کرديا، کہتے ہيں جب کچھ کيا ہی نہيں تو معذرت کس بات پر کروں۔

ايک اور سوال کے جواب ميں مودی بولے کہ اگر مجھ پر لگے الزامات ثابت ہوجائيں تو مجھے تاريخی سزا دے کر مثال بناديا جائے۔

مودی کہتے ہيں ميرے راج ميں مصالحت کی سياست نہيں چلے گی، ميں کسی کو خوش کرنے کيلئے مسلمانوں کی ٹوپی نہيں پہنوں گا، يہ ميری ثقافت کے خلاف ہے اور مجھے ايسا کرنے کيلئے مجبور نہ کيا جائے۔

بھارتی تجزيہ کاروں کے مطابق مودی سرکار کی آمد بھارت ميں سيکولر ازم کی موت بھی ثابت ہوسکتی ہے۔ سماء

Hayatabad

motogp

Tabool ads will show in this div