مصر میں ایک بار پھر فوجی اقتدار، الفتح السیسی صدارتی الیکشن میں کامیاب

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ

قاہرہ : مصر کو جمہوریت راس نہ آئی، فوج کی زیرنگرانی صدارتی الیکشن میں سابق فوجی سربراہ الفتح السیسی نے اپنے پیشروں کی طرح  اقتدار سنبھال لیا۔

قاہرہ کے تحریر اسکوائر پر جشن جمہوریت کے جنازے پر منایا جارہا ہے، فوج کی نگرانی میں ہونے والے نام نہاد صدارتی الیکشن میں جمہوریت کا گلا گھونٹ دیا گیا۔

مصر میں پرانا دور لوٹ آیا، حسنی مبارک، جمال عبدالناصر اور انور سادات کی طرح اقتدار پھر فرد واحد  کے پاس چلا گیا۔

صدارتی الیکشن کا نتیجہ توقعات کے مطابق رہا، سابق فوجی سربراہ نے 97 فیصد سے زائد ووٹ لیکر کامیابی کے جھنڈے گاڑے، جس پر مصری عوام نے آسمان کو روشنیوں سے بھر کر جمہوریت تاریک راہوں پر ڈال دی۔

عبدالفتاح السیسی نے گزشتہ سال جولائی میں ملک کے پہلے منتخب صدر محمد مرسی کو معزول کرکے اقتدار پر  قبضہ کرلیا تھا، جس پر مصری عوام کی اکثریت ان سے نالاں ہے اور اس کا اظہار صدارتی الیکشن کا بائیکاٹ کرکے کیا، جس سے ان کی صدارت عالمی برادری کے سامنے سوالیہ نشان بن گئی ہے۔ سماء

hezbollah

crimes

Tabool ads will show in this div