پی ایس پی اور پی ٹی آئی میں رابطہ، مل جل کر مسائل حل کرنے کا عزم

کراچی : سینیٹ انتخابات قریب کیا آئے کراچی کا سیاسی ماحول گرم ہونے لگا، سیاسی جماعتوں کا ایک دوسرے کے آنگن میں آنا جانا شروع ہوگیا، پاک سرزمین پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف میں بھی رابطے ہوگئے، دونوں جماعتوں نے کراچی کے مسائل مل کر حل کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ عمران اسماعیل کہتے ہیں کہ کراچی کو تجرباتی لیبارٹری سے زیادہ حیثیت نہیں ملی۔

سینیٹ کے انتخابات پر سیاسی جوڑ توڑ شروع ہوگئی، تحریک انصاف نے پی ایس پی کے دفتر میں انٹری دے دی، پاکستان ہاؤس میں بھی ایک رابطہ کمیٹی بنادی گئی۔

عمران اسماعیل سے پوچھا گیا کہ کیا وہ ایم کیو ایم پاکستان سے بھی ملاقات کیلئے جائیں گے تو انہوں نے کہا کہ پہلے ایم کیو ایم خود تو طے کرلے کہ لیڈر کون ہے؟، کراچی کو تجرباتی لیبارٹری سے زیادہ حیثیت نہیں ملی، میئر اور ڈپٹی میئر کے پاس اختیارات نہیں۔

وہ بولے کہ عوامی مسائل کے حل کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے، سینیٹ الیکشن میں ایک دوسرے کے امیدواروں کو سپورٹ کریں گے، مصطفیٰ کمال دور میں کراچی کو بدلتے دیکھا ہے۔

رضا ہارون کا اس موقع پر کہنا تھا کہ پی ایس پی اور پی ٹی آئی کے درمیان بننے والی رابطہ کمیٹی وہ نہیں جس میں کنوینر یا اختیارات کی جنگ ہو، آج کل دھرنوں اور احتجاج کے بغیر کوئی مسئلہ حل نہیں کیا جاتا، عوام احتجاج کریں تو براہِ راست گولیاں ماری جاتی ہیں، افسوس! ہمارے حکمران کہتے ہیں مجھے کیوں نکالا، آنے والی نسل کیلئے ہر جماعت کے ساتھ کام کرنے کو تیار ہیں۔ سماء

PTI

ELECTION

SENATE

Politics

Imran Ismael

raza haroon

PSP

Tabool ads will show in this div