نیب عدالت نے نواز شریف کے خلاف فیصلہ سنا دیا

اسلام آباد : احتساب عدالت اسلام آباد نے ایون فیلڈ ضمنی ریفرنس پر نواز شریف کے اعتراضات مسترد کر دیئے، جب کہ ضمنی ریفرنس میں نئے گواہوں اور شواہد کو ریفرنس کا حصہ بنانے کی منظوری دے دی گئی ہے۔

آج ہونے والی سماعت میں نا ایل وزیراعظم نواز شریف اپنی بیٹی اور داماد کے ہمراہ احتساب عدالت میں ہوئے۔ احتساب عدالت میں نواز شریف کیخلاف تین ریفرنس کی سماعت ہوئی، احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے مقدمات کی سماعت کی۔

نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے ضمنی ریفرنس پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ نیب ضمنی ریفرنس میں نئے شواہد لانے میں ناکام رہا، فریقین کی تقاریرو ٹی وی انٹرویوز پہلے ہی ریکارڈپر ہیں،نیاملزم آیانہ ہی نئے اثاثوں کی کھوج لگائی گئی،ضمنی ریفرنس میں نیب معذرت ہی کررہا ہے۔

خواجہ حارث نے کہا کہ جے آئی ٹی رپورٹ کوبنیادبناکرایک اورریفرنس دائرکردیاگیا،عدالت سے استدعا ہے کہ نوازشریف کیخلاف نیب کا ضمنی ریفرنس خارج کیا جائے۔

نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ الزامات وہی ہیں،نئے گواہ سامنے آئے،اس پر وکیل مریم نوازنے کہا کہ ضمنی ریفرنس میں مریم نوازپرکوئی الزام نہیں،ضمنی ریفرنس کے مطابق مریم نوازلندن فلیٹس کی بینی فیشل مالک نہیں،نیب کے ضمنی ریفرنس کوخارج کیاجائے، وکیل مریم نواز نے کہا کہ ضمنی ریفرنس میں نیب نے نئی کہانی سنائی،ضمنی ریفرنس میں بچوں کے الزامات بھی نوازشریف پرمنتقل کردیئے گئے۔

 

احتساب عدالت نے ریفرنس پر محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے نوازشریف کے اعتراضات مسترد کر دیئے، نئے گواہوں اور شواہد کو ریفرنس کا حصہ بنانے کی منظوری دے دی اور سماعت 2 فروری تک ملتوی کردی۔ سماء

corruption Cases

MARYAM NAWAZ

London Flats

#PanamaVerdict

reference case

Flagship Investment

Avenfield properties

Tabool ads will show in this div