سیالکوٹ میں زیادتی اور بدفعلی کے 200 سے زائد کیس رپورٹ

سیالکوٹ: پنجاب کے شہر سیالکوٹ میں تیرہ ماہ کے دوران زیادتی اور بدفعلی کے دو سو نو کیس رپورٹ ہوئے۔ متاثرہ خاندان انصاف کے منتظر ہيں۔


تفصیلات کےمطابق تیرہ ماہ کے دوران سیالکوٹ کے دو سو نو بچے اور بچياں زیادتی اور بدفعلی کا شکار ہوئے۔ سات ماہ قبل بدفعلی کے بعد قتل ہونے والے علی حمزہ اور ذیشان کے اہل خانہ آج بھی انصاف کے منتظر ہیں۔

متاثرہ خاندان کہتے ہيں کہ پوليس مقدمات درج کرکے ميٹھي نيند سو گئي ہے جبکہ پولیس کے مطابق تفتیش میرٹ پر ہو رہي ہے۔

ڈی پی او اسد سرفراز کا کہنا ہے کہ جب زیادتی اور بدفعلی کے کیس رپورٹ ہوتے ہیں تو ہماری ترجيحات پر ہوتے ہیں۔ ان مقدمات میں پولیس نے تمام کیس چالان کئے ہیں اور تمام ملزمان کو تفتیش کے مرحلے سے گزارا گیا ہے۔

شہریوں کا مطالبہ ہے کہ جنسی زیادتی میں ملوث ملزمان کو عبرت کا نشان بنایا جائے تاکہ مستقبل میں ایسے واقعات رونما نہ ہوسکیں۔ سماء

PUNJAB

victims family

Tabool ads will show in this div