طالبان عارضی جنگ بندی پر آمادہ ہو گئے، اعلان چوبیس گھنٹوں میں متوقع

اسٹاف رپورٹر
اسلام آباد: امن مذاکرات رنگ لانے لگے۔ طالبان عارضی جنگ بندی پرآمادہ ہوگئے۔ مستقل امن کیلئے رشتے داروں کی رہائی اور ساتھیوں کے تحفظ کی شرط عائد کردی۔ چوبیس گھنٹوں میں اعلان متوقع ہے۔
حکومت کا فوری جنگ بندی کا مطالبہ جس پر طالبان نے حامی بھر دی مگر شرطیں بھی لگادیں۔
طالبان کی سیاسی شوریٰ کی بیٹھک میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ عارضی جنگ بندی کی جائے گی اگر اِس دوران اُن کا ایک بھی ساتھی مارا گیا تو پھر۔
وہ اپنی کارروائیاں کرنے میں آزاد ہوں گے۔
طالبان شورٰی نے مستقل جنگ بندی کیلئے بھی اپنے تین مطالبات دُہرادیے
نمبر ایک گرفتار ساتھیوں کو تحفظ دیا جائے۔ نمبر دو، مزید کسی طالبان ساتھی کو گرفتار نہ کیا جائے اور جیلوں میں قید شدت پسندوں کے قریبی رشتہ داروں خصوصاً بچوں ۔ بوڑھوں اور خواتین کی رہائی کی بھی شرط لگادی
طالبان شورٰی کا فیصلہ رابطہ کاروں کے ذریعے حکومت کو پہنچادیا جائے گا جبکہ جنگ بندی کا اعلان چوبیس گھنٹوں میں متوقع ہے۔ سماء

میں

پر

MH370

tragic

britain

missing

ahmadinejad

Tabool ads will show in this div