سیاہ فام نوجوان کا قتل، پولیس اہلکار رہا، احتجاج کئی ریاستوں میں پھیل گیا

اسٹاف رپورٹ

نیویارک : امريکا ميں سياہ فام نوجوان کو قتل کرنیوالے اہلکار کی رہائی پر احتجاج کا دائرہ مختلف رياستوں تک پھيل گيا، میسوری ميں ہنگامہ آرائی کے دوران 2 اہلکار زخمی ہوگئے۔

سياہ فام نہتے نوجوان کے قاتل کو کيوں چھوڑا، امريکا ميں عدالتی فيصلے کے خلاف لوگ سڑکوں پر نکل آئے، نیویارک، واشنگٹن، اٹلانٹا، ہوسٹن اور پورٹ لینڈ ميں شديد احتجاج کيا گيا، کئی مقامات پر مظاہرين اور پوليس ميں جھڑپيں بھی ہوئيں، جس کے بعد پکڑ دھکڑ کا سلسلہ شروع ہوگيا۔

فرگوسن سٹی میں میئر آفس کے باہر دھرنا دیا گیا، سیاہ فام کے ساتھ سفید فام افراد نے بھی مظاہرے ميں شرکت کی، ہنگامہ آرائی کے دوران 2 ایف بی آئی اہلکار گوليوں کا نشانہ بن گئے، جس کے بعد علاقے ميں سرچ آپريشن شروع کرديا گيا۔

دوسری جانب سياہ فام نوجوان کی ہلاکت میں ملوث پولیس اہلکار نے سی این این کو انٹرویو ميں اپنے فعل کو درست قرار ديا اور کہا کہ اس نے صرف اپنی ڈيوٹی پوری کی ہے۔ سماء

updates

defence

squads

selection

Tabool ads will show in this div