ناقابل اشاعت

سوری آپ کی یہ تحریر شائع نہیں ہوسکتی۔

لیکن کیوں؟

کیا یہ ایک جامع تحریر نہیں،ایسی بات نہیں...تحریر جامع ہے۔

تو پھر کیا وجہ ہے. جو اشاعت کے قابل نہیں؟

دیکھو میری بات کو سمجھنے کی کوشش کرو...اِس کامتن لسانیت پر مبنی ہے،کیا کہا..... متن لسانیت پر مبنی ہے...؟ یہ کیسے ہوسکتا ہے... تحریر میں تو لسانیت اورعصبیت کو ختم کرنے کی بات کی گئی ہے۔تمام قوموں کو یکساں حقوق کی فراہمی کی بات کی گئی ہے۔

بات کو سمجھو...ابھی تو اللہ اللہ کرکے کراچی میں امن قائم ہوا ہے ایسی باتیں کرکے تم پھر سے لوگوں میں اشتعال پھیلانا چاہتے ہو،نہیں میں اسے شائع نہیں کرسکتا یہ ہماری پالیسی میں نہیں....تم کچھ نیا کرو۔

آپ بتائیں کیا کروں؟

کچھ ایسا لکھو کہ انسانی ذہن سوچنے پر مجبور ہوجائے۔اُن میں ایک تحریک پیدا کردو۔اُسےاِس قابل بنادو کہ وہ حقیقت کو سمجھ سکے سچ کو جان سکے۔خوف کی فضا سے باہر نکالو سب کو...!

ارے یہ کیا. تم پھر اُلٹی سیدھی تحریر لکھ کر لے آئے. ہم اِسے شائع نہیں کرسکتے. یہ تحریر ناقابلِ اشاعت ہے،کیوں؟ اب اِس میں کیا ہے۔

تمھیں ستر سالوں سے ملک کو لوٹنے والے سیاستدان زیادہ بھاگئے ہیں کیا؟ جو اِن کے قصیدے پڑھتے نہیں تھک رہے. پوری تحریر میں جمہوریت جمہوریت کا نعرہ الاپ رکھا ہے. ارے بھائی یہ لٹیرے اتنے اچھے ہوتے تو یہ ملک آج اِس نہج پر ہوتا؟

سر اِنھیں کام بھی تو نہیں کرنے دیا گیا. جب بھی کوئی پارٹی برسرِ اقتدار آئی اُس کے پیچھے ایک ڈبہ باندھ دیا گیا. وہ اپنا اقتدار بچائیں یا کام کریں. آپ خود دیکھیں پچھلے پانچ سالوں سے ملک میں کیا ہورہا ہے ڈبہ سیاست ہی تو ہورہی ہے۔

اچھا تو اِن کے پیچھے یہ ڈبہ باندھتا کون ہے؟۔یہ بات آپ مجھ سے بہتر جانتے ہیں۔

دیکھو میں صرف اتنا جانتا ہوں کہ تمھاری یہ تحریر چور لٹیروں کے حق میں ہے۔اِس تحریرسےستر سالوں سےملک پرقابض چوروں لٹیروں کو مزید تقویت ملے گی۔اِس لیے ہم اسے شائع نہیں کر سکتے،تم کچھ نیا کرو۔

آپ بتائیں کیا کروں؟

کچھ ایسا لکھو کہ انسانی ذہن سوچنے پر مجبور ہوجائے. اُن میں ایک تحریک پیدا کردو. اُسے اِس قابل بنادو کہ وہ حقیقت کو سمجھ سکے سچ کو جان سکے. خوف کی فضا سے باہر نکالو سب کو...!۔یہ کیا لکھا ہے؟  تم کیا سمجھتے ہو تم جو بھی لکھو گے ہم چھاپ دینگے؟

اب اِس میں کیا ہے؟ اتنی محنت سے دماغ لگا کر لکھا ہے اور آپ ایسے بول رہے ہیں۔میں اسے شائع نہیں کرسکتا. اِس کا متن مذہبی ہے۔متن مذہبی ہے؟

یہ کیسے ہوسکتا ہے؟ میری تحریر تو مذہب سے آزاد ہے۔ارے بھائی تمھارے پاس یہی متنازعہ موضوعات رہ گئے ہیں؟ نیک آدمی تمھیں پتا ہونا چاہیے ہمارا معاشرہ مشرقی تہذیب کا گہوارہ ہے اور تم اس معاشرے میں کبھی عورت کی مادر پدر آزادی کی بات کرتے ہو تو کبھی لبرل ازم کا پرچار کرتے ہو. ادارے پر مولویوں کی یلغار کروانے کا ارادہ ہے کیا؟ نہیں یہ تحریر تو بالکل بھی شائع نہیں ہوسکتی۔تم کچھ نیا کرو.

آپ بتائیں کیا کروں؟

کچھ ایسا لکھو کہ انسانی ذہن سوچنے پر مجبور ہوجائے. اُن میں ایک تحریک پیدا کردو. اُسے اِس قابل بنادو کہ وہ حقیقت کو سمجھ سکے سچ کو جان سکے. خوف کی فضا سے باہر نکالو سب کو...!۔

یہ کیا لکھا ہے؟ تمھیں دنیا سے اُلٹا چلنے میں مزا آتا ہے کیا؟کیوں اب کیا ہوا؟

کراچی میں ایک پروفیسر کی موت ہوتی ہے. تمام ڈاکٹرز اسے طبعی موت قرار دے چکے ہیں۔بڑے سے بڑے نیوز چینل پر اِس حوالے سے یہی خبر چلائی جارہی ہے اور تم ہو کے...اپنی اِس تحریر سے آخر تم ثابت کیا کرنا چاہتے ہو؟

سچ...سچ ثابت کرنا چاہتا ہوں۔۔اچھا تو تم سچ ثابت کرنا چاہتے ہو۔جیسے باقی سب تو جھوٹ بول رہے ہیں۔ تمام ڈاکٹرز، میڈیکل رپورٹس، پوسٹ مارٹم سمیت سب جھوٹےاورتم سچے ہیں ناں؟

میں نے ایسا تو نہیں کہا۔میں نے تو محترم چیف جسٹس صاحب سے سوموٹو لینے کی درخواست کی ہے تاکہ انکوائری ہو اور شواہد کی روشنی میں اصل محرکات کو جانا جاسکے۔

تمھیں کیا لگتا ہے چیف جسٹس صاحب اِس واقعے سے آگاہ نہیں ہونگے۔اگر وہ ضروری سمجھیں گے تو خود ایکشن لے لیں گے۔تمھاری تحریر کی ضرورت نہیں ۔تمھاری یہ تحریر حقائق پر مبنی نہیں ہے اِس لیے ہم اِسے شائع نہیں کرسکتے۔ تم یہ بتاؤ کچھ نیا نہیں کرسکتے؟ آپ بتائیں کیا کروں؟

کچھ ایسا لکھو کہ انسانی ذہن سوچنے پر مجبور ہوجائے. اُن میں ایک تحریک پیدا کردو. اُسے اِس قابل بنادو کہ وہ حقیقت کو سمجھ سکے سچ کو جان سکے. خوف کی فضا سے باہر نکالو سب کو...! اب انھیں کون سمجھائے ضرورت مجھے نیا کرنے کی نہیں انھیں جرات پیدا کرنے کی ہے۔

JOURNALISM

Tabool ads will show in this div