سندھ حکومت کا بچوں سے زیادتی کے واقعات کے سدِباب کیلئے بڑا قدم

کراچی: وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے محکمہ تعلیم کو بچوں کے حوالے سے خصوصی اقدامات اٹھانے کی ہدایات جاری کر دیں۔


جمعرات کو جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق انہوں نے کہا کہ زینب اس قوم کی بیٹی تھی جس کے ساتھ ہونے والی درندگی نے ہم سب کو جھنجھوڑ دیا ہے، ایسے افسوسناک واقعات روکنے کے لیے قانون کو فوری طور پر حرکت میں آنا چاہیے۔

سید مراد علی شاہ نے کہا کہ اسکولوں میں بچوں کو خصوصی تعلیم دینا بھی بہت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ کے تمام اسکولوں میں بچوں کو جنسی ذیادتی سے بچنے کے لیے تیار کیا جائیں اور والدین کو بھی اس آگاہی مہم کا حصہ بنایا جائے۔ بچوں کو اپنے ساتھ ہونے والی ذیادتی کو رپورٹ کرنے کی بھی آگاہی دی جائے اور سکھایا جائے کہ ان کے ساتھ ہونے والی بری حرکت میں اس بچے یا بچی کا قصور نہیں۔ معصوم بچوں کے ساتھ ہونے والی کسی بھی قسم کی ذیادتی برداشت نہیں کی جائے گی۔ اس حوالے سے اساتذہ کو بھی تربیت دی جائے۔

وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی ہدایات پر وزیراعلی ہاﺅس میں بچوں سے زیادتی کے واقعات کے سدِباب کے لیے خصوصی ڈیسک قائم کردیا گیا ہے، یہ ڈیسک وزیر اعلی ہاﺅس کی کمپلینٹ سیل میں قائم کیا گیا ہے جہاں 7/24 شکایت وصول کی جائیں گی۔ کمپلینٹ سیل میں بچوں سے ہونے والی کسی بھی قسم کی زیادتی سے متعلق فون نمبرز 02199202080, 02199202081, 02199207568, 02199207394 اور 919 پررابطہ کرکے شکایات درج کرائی جاسکتی ہیں، جن کے ازالے کے لیے سیل میں موجود اہلکار فوری کارروائی کریں گے۔

وزیر اعلی سندھ نے کہا کہ معاشرے میں اس حوالے سے آگہی اور شعور بیدار کیا جائے۔ انہوں نے پولیس انتظامیہ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پولیس و دیگر قانون نافذ کرنے والے ادارے اس حوالے سے کسی بھی قسم کی شکایت موصول ہونے پر فوری کارروائی کریں۔

وزیر اعلی سندھ نے اس بات کا عزم کیا کہ ہمیں اپنے معاشرے کو اس لعنت سے پاک کرنے کے لیے تمام تر اقدامات کرنے ہیں اور مذموم عناصر کی سرگرمیوں پر کڑی نگاہ رکھنی ہے۔ سماء

PARENTS

MURAD ALI SHAH

RAPE CASE

Complaint Cell

Justice for Zainab

Tabool ads will show in this div