Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  15

دلیپ کمارکی آبائی حویلی کی خریدوفروخت پرضلعی انتظامیہ کی پابندی

SAMAA | - Posted: Oct 7, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 7, 2020 | Last Updated: 2 years ago

پشاورکےمحلہ خداداد میں موجود برصغیرکےاداکار دلیپ کمار کے آبائی گھر کی خرید و فروخت پر ضلعی انتظامیہ نے پابندی عائد کردی۔

پشاورمیں لیجنڈ اداکار دلیپ کمار کے صدی پرانے بوسیدہ آبائی گھر کو محفوظ بنانے کا منصوبہ بنالیا گیا ہے۔ محکمہ آرکیالوجی کے مراسلے پر ضلعی انتظامیہ نے سیکشن 4 نافذ کرتے ہوئے اس کی خرید و فروخت پر پابندی لگا دی۔

معاون خصوصی برائےاطلاعات کامران بنگش نے کہا کہ دلیپ کمار کے گھر کو اپنی اصل حالت میں بحال کرنا حکومت کی ترجیح ہے۔

دلیپ کمار کے گھر سے تھوڑے ہی فاصلے پر ڈھکی دالگراں میں راج کپور خاندان کی حویلی بھی انتہائی بوسیدہ ہوچکی ہے۔ محکمہ آثار قدیمہ کے مطابق اس کو بھی جلد حکومتی تحویل میں لیا جائے گا۔

صوبائی حکومت نے دلیپ کمار اور راج کپورکی آبائی رہائش گاہوں کو خرید کراسے میوزیم میں تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

پشاور:دلیپ کمار،راج کپورکےگھروں کومیوزیم بنانےکا فیصلہ

بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق صوبے کے ڈائریکٹر آف آرکیالوجی اینڈ میوزیمز ڈاکٹر عبدالصمد نے ڈپٹی کمشنر پشاور کو ایک خط میں لکھا ہے کہ محکمہ آثارِ قدیمہ اس سائٹ کو آثارِ قدیمہ ایکٹ کے تحت ‘محفوظ آثار’ قرار دینا چاہتا ہے تاکہ یہ آنے والی نسلوں کے لیے محفوظ رہے اور ثقافتی سیاحت کو فروغ مل سکے۔

دلیپ کمارنےپشاورکےگھرکی یادیں تازہ کردیں

خط میں مزید کہا گیا ہے کہ اس لیے مذکورہ زمین اگر سرکاری ملکیت میں ہے تو اسے ڈائریکٹوریٹ آف آرکیالوجی اینڈ میوزیمز کے حق میں منتقل کر دیا جائے یا اگر نجی ملکیت میں ہے تو اسے لازمی طور پر حصولِ اراضی کے قانون کے تحت حاصل کر لیا جائے۔

دلیپ کمارکی اہلیہ سائرہ بانوخیبرپختونخواحکومت کی مشکور

چند روز قبل ٹوئٹر پر ایک پوسٹ میں اداکار دلیپ کمار نے اس گھر میں گزارے اپنے بچپن کی یادوں کا تذکرہ کیا،جہاں وہ اپنےخاندان کےلوگوں کے ساتھ رہا کرتے تھے۔ٹوئٹ میں معروف اداکار نے اپنی یادوں کو تحریر کرتے ہوئے کہا کہ میں ایک دم اس عہد میں پہنچ گیا ہوں جس میں میرے والدین، میرے دادا دادی، نانا نانی اور متعدد چچا، تایا ماموں، خالائیں، پھوپھیاں، چچی اور کزنز رہا کرتے تھے، جنکی آواز و گفتگو اور ہنسی گھر میں گونجا کرتی تھی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube