Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

سندھ میگا اسکینڈل:آصف زرداری، بلاول اورفریال تالپورطلب

SAMAA | - Posted: Nov 24, 2018 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA |
Posted: Nov 24, 2018 | Last Updated: 3 years ago

سندھ میگا منی اسکینڈل میں پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علي زرداري، چیئرمین بلاول بھٹو زرداري اور فريال تالپور کو 28 نومبر کو طلب کرليا گیا۔

سندھ ميگامني لانڈرنگ اسکينڈل کی تفتیش کرنے والی ٹیم نے عدالتی حکم پر زرداری گروپ پرائیویٹ لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹوبلاول بھٹو زرداری، آصف علي زرداري اور کمپنی کي ڈائریکٹرفریال تالپورکو28نومبرکي صبح گيارہ بجے طلب کیا ہے۔ ۔

تينوں پی پی رہنماؤں سے جعلي اکاؤنٹس کے ذريعے زرداري گروپ کے اکاؤنٹس ميں رقم منتقلي سے متعلق سوالات کيے جائيں گے۔آصف زرداری سے ان کی املاک ، اومنی گروپ سے روابط اور دستاویزات پر ان کے ہاتھ سے لکھی گئی تحریروں کے بارے میں سوالات کيے جاسکتے ہيں ۔

تفتيشي ٹيم آئندہ ہفتے انورمجيد، اے جي مجيد سے بھي تفتيش کرے گي جبکہ ملک رياض کو بھي آئندہ ہفتے تفتيش کے لیے بلوايا جائے گا۔

دوسري جانب تفتيشي ٹيم نے اومني گروپ کو بيمار صنعتوں کي بحالي کے ليے سندھ حکومت کے افسران کي جانب سے 4ارب روپے دينے معاملے پر پوچھا کہ کس فورم کے تحت اومني گروپ کي صنعتوں کو بيمار صنعت قراردياگيا؟ سندھ کي ديگر بيمار صنعتوں کو چھوڑ کر صرف اومني گروپ کي صنعتوں کو ہي کيوں نوازاگيا؟ ٹھٹھہ شوگر ملز کيليے ایک ارب روپے لينے کے باوجود ملز شروع کيوں نہیں کی گئي؟۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے سندھ میگا منی لانڈرنگ اسکینڈل کے تحت جعلی اکاؤنٹس کیس کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی تشکیل دی تھی جس کے سربراہ ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے احسان صادق ہیں، ٹیم میں نیب، آئی ایس آئی، ایس ای سی پی،ایف بی آراور اسٹیٹ بینک کے نمائندے بھی شامل ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube