Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  17

مالی کے ’انسانی شکاریوں‘ نے32دیہاتی مار ڈالے

SAMAA | - Posted: Jun 25, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Jun 25, 2018 | Last Updated: 4 years ago
[caption id="attachment_1171172" align="aligncenter" width="640"] شکاریوں کا گروہ دیہات میں داخل ہو رہا ہے۔ فوٹو: ٹی آر ٹی ورلڈ[/caption]

افریقی ملک مالی میں شکاریوں کا ایک ایسا گروہ موجود ہے جو مقامی دیہات کا محاصرہ کرکے شہریوں کا ’شکار‘ کرتا ہے۔ گزشتہ روز اسی  روایتی شکاری گروہ نے ایک دیہات کا محاصرہ کرتے ہوئے 32عام شہریوں کو قتل کر دیا جن میں بچے بھی شامل ہیں۔

عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق جس گاؤں پر حملہ کیا گیااس کا نام کوماگا ہے جو وسطی مالی میں واقع ہے اور یہاں فولا نسل کے لوگ رہائش پذیر ہیں۔

شکاریوں کے ہاتھوں ہلاک ہونے والوں کا تعلق فولا نسل سے بتایا گیا ہے۔ مقامی حکام نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ شکاریوں نے گاوں میں داخل ہوکر فولا نسل کے افراد کو علیحدہ کیا اور پھر سب کو فائرنگ کرکے قتل کردیا۔

مقامی کمیونٹی نے الزام عائد کیا ہے کہ اس شکاری گروہ کو مالی کی حکومت اور فوج کی سرپرستی حاصل ہے جبکہ فوج اور شکاری گروپ کا کہنا ہے کہ اس طرح کی کارروائیاں جہادی گروپ کے خلاف ہورہی ہیں۔ آزاد ذرائع کے مطابق مقامی آبادی میں جہادی عناصر کا وجود نہیں ہے۔

 کچھ روز قبل مالی میں 25 افراد کی اجتماعی قبر دریافت ہوئی تھی جس پر امریکا نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مالی کی حکومت سے تحقیقات کا مطالبہ کیا تھا۔ مالی کی حکومت نے اعتراف کیا ہے کہ فولا نسل کے افراد کی ہلاکتوں میں فوج کے ’بعض عناصر‘ ملوث ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube