Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  17

امتحانات میں نقل روکنے کے لیے انٹرنیٹ اور فون سروس معطل

SAMAA | - Posted: Jun 21, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Jun 21, 2018 | Last Updated: 4 years ago

افریقی ملک الجزائر میں حکومت نے امتحانات میں نقل کی روک تھام کے لیے ملک بھر میں انٹرنیٹ اور لینڈ لائنڈ سروسز معطل کردی ہیں۔

امتحانات 20 سے 25 جون تک جاری رہیں گے جس میں تقریباً 70 ہزار طلبہ و طالبات شریک ہوں گے اور ان کے نتائج 22 جولائی کو متوقع ہیں۔

الجزائر کی وزیرِ تعلیم نے کہا ہے کہ ملک بھر میں امتحانات کے دوران فیس بک اور ٹوئیٹر کو بلاک کر دیا جائے گا۔ وزیر تعلیم نے کہا کہ وہ اس فیصلے پر خوش نہیں ہیں لیکن ہاتھ پر ہاتھ دھرے نہیں بیٹھ سکتی۔ اس لیے قبل از وقت پرچہ آوٹ ہونے سے بچنے کے لیے انٹرنیٹ معطل کرنا ضروری ہے۔

انٹرنیٹ اور فون کے ساتھ ہی ملک بھر میں قائم دو ہزار سے زائد امتحانی مراکز میں کسی بھی قسم کے الیکٹرانک اشیا لے جانے پر بھی پابندی عائد کی گئی ہے اور طالب علموں کو میٹل ڈیٹیکٹر کی مدد سے گزارا جائے گا جبکہ پرچے چھاپنے والے پرنٹنگ پریس میں سی سی ٹی وی کیمرے اور موبائل سگنل جام کرنے کے لیے جیمر لگائے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ 2016 میں الجزائر میں امتحانات کے دوران بڑے پیمانے پر نقل کے واقعات سامنے آئے تھے۔ اکثر و بیشتر سوالنامے امتحان شروع ہونے سے قبل ہی انٹرنیٹ پر گردش کرنے لگے تھے۔

دلچسپ امر یہ ہے کہ الجزائر کی حکومت گزشتہ برس بھی امتحانات کے دوران انٹرنیٹ سروسز معطل کرچکی تھی تاہم یہ بندش بھی نقل روکنے میں کارگر ثابت نہ ہو سکی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube