Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

کم جانگ کی تعریف، ٹرمپ کے بیان نے نیا تنازعہ کھڑا کردیا

SAMAA | - Posted: Jun 16, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Jun 16, 2018 | Last Updated: 4 years ago

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ کم جانگ ان سخت مزاج ہیں، جب وہ بولتے ہیں تو پوری قوم بیٹھ کر سنتی ہے، میں چاہتا ہوں امریکی بھی ایسا ہی کریں۔ ٹرمپ کی جانب سے شمالی کوریا کی آمریت کی تعریف پر نیا تنازع کھڑا ہوگیا۔ تنقيد ہوئي تو بيان کو مذاق قرار دے ديا گیا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کو آمريت کي تعريف مہنگي پڑ گئي۔ کم جونگ اُن کے طرز حکومت کي تعريفی بیان پر ٹرمپ کو جب شدید تنقيد کا نشانہ بنایا گیا تو انہوں نے قلابازی کھاتے ہوئے بيان کو مذاق قراردے ڈالا۔

فاکس نيوز کے ميزبان کو انٹرويو ميں شمالي کوريا کے سربراہ کي کھل کر تعريف کي۔ اور جب تعریفیں گلے پڑ گئیں تو بیان سے ہی مکر گئے، تاہم
انٹرويو ميں شمالي کوريا سے معاہدے کا بھرپور دفاع کيا۔ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ميں نہيں چاہتا کہ ايٹمي ہتھيار آپ کا اور آپ کي فيملي کا صفايا کردے۔ ميں شمالي کوريا سے اچھے تعلقات رکھنا چاہتا ہوں۔

ٹرمپ نے حسب عادت مخالف ميڈيا کے خلاف بھي دل کي بھڑاس نکالي اور کہا کہ آپ سي اين اين کو ديکھيں، کتنا بڑا فراڈ ہے يہ، جس پر ٹی وی میزبان نے کہا کہ وہ سن رہے ہيں، وہ آپ کے پيچھے ہي ہيں، جس پر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ مجھے سن رہے ہو۔

وائٹ ہاؤس کي ترجمان سے سخت سوالات کے واقعے پر ٹرمپ نے کہا کہ ميں اس وقت وہاں ہوتا تو واک آؤٹ کرديتا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube