Tuesday, May 17, 2022  | 1443  شوّال  15

ڈالر کی اونچی اڑان، انٹربینک میں نرخ 192.53 ہوگئے

SAMAA | - Posted: May 13, 2022 | Last Updated: 4 days ago
SAMAA |
Posted: May 13, 2022 | Last Updated: 4 days ago

روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں روز گراوٹ دیکھی جارہی ہے، انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر 192.53 روپے جبکہ اوپن مارکیٹ میں ایک ڈالر 194.50 روپے تک پہنچ گیا۔

کاروباری ہفتے کے آخری روز بھی منی مارکیٹ میں پاکستانی کرنسی کی قدر میں مسلسل گراوٹ کا سلسلہ جاری رہا۔

اوپن مارکیٹ میں جمعہ کے روز روپے کی قدر میں مزید ایک روپے 23 پیسے کمی دیکھی گئی، جس کے بعد ڈالر کی قدر ملکی تاریخ میں پہلی بار 195 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی تاہم کاروبار کے اختتام پر نرخ 194.50 روپے پر پہنچ گئے۔

انٹر بینک میں بھی ایک وقت میں ڈالر 193روپے سے تجاوز کرگیا تھا تاہم ٹریڈنگ کے اختتام پر اس کی قدر 76 پیسے اضافے کے بعد 192 روپے 53 پیسے ہوگئی۔

ایکس چینج کمپنیز ایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری ظفر پراچہ کے مطابق  غیر قانونی منی چینجرز 200 روپے میں ڈالر فروخت کررہے ہیں.

کرنسی ڈیلرز کا کہنا ہے کہ حکومت کو روپے کی قدر میں گراوٹ کو روکنے کے لیے فوری اقدامات کرنے چاہیے، بصورت دیگر اس کے ملکی معیشت پر خطرناک اثرات مرتب ہوں گے.

نئی حکومت کے بعد سے اب تک مجموعی طور پر ڈالر 9 روپے 60 پیسے مہنگا ہو چکا ہے۔

دوسری جانب پاکستان کے غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں بھی تیزی سے کمی ہورہی ہے۔اسٹیٹ بینک کے زرمبادلہ کے ذخائر 10 ارب ڈالر کی سطح تک آگئے ہیں۔

گزشتہ ایک ہفتے کے دوران زرمبادلہ کے ذخائر میں 19 کروڑ ڈالر کی کمی ہوئی ہے۔ مرکزی بینک کا کہنا ہے کہ زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی غیر ملکی ادائیگیوں کی وجہ سے ہوئی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube