Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

چین نے ڈیجیٹل کرنسی مقامی افراد میں تقسیم کردی

SAMAA | - Posted: Oct 15, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 15, 2020 | Last Updated: 2 years ago
[caption id="attachment_2069026" align="alignnone" width="800"] فوٹو: رائٹرز[/caption]

چین کے مرکزی بینک نے شینزین شہر کے 50 ہزار شہریوں میں قرعہ اندازی کے ذریعے ایک کروڑ 'یوان' مالیت کی ڈیجیٹل کرنسی تقسیم کردی۔

قرعہ اندازی میں کامیاب ہونے والے ہر شہری کو تقریباً 200 یوان مالیت کے 'پیکٹ' دیے گئے۔ اس کرنسی کو ڈاؤن لوڈ کرکے شہری یہ رقم موجودہ 3ہزار سے زائد دکانوں میں ڈیجیٹل ادائیگیوں کیلئے استعمال کرسکیں گے۔

دوسری جانب چین کا مرکزی بینک دنیا کی پہلی بڑی خود مختار ڈیجیٹل کرنسی متعارف کرانے کی تیاریاں شروع کر چکا ہے۔

چین نے اسے ڈیجیٹل کرنسی الیکٹرانک پیمنٹ کا نام دیا ہے۔ آئندہ چند ماہ میں چینی عوام بھی اس کرنسی کو استعمال کرسکیں گے، جب کہ پیپلز بینک آف چائنا اولمپک سال 2022 میں اس ڈیجیٹل کرنسی کو استعمال کرنا چاہتا ہے۔

بیجنگ کا کہنا ہے کہ وہ رواں سال کے آخر تک ملک میں ڈیجیٹل ادائیگیوں کے عمل کو یقینی بنانا چاہتا ہے لیکن یہ عمل کب شروع ہوگا، اس حوالے سے کوئی حتمی اعلان نہیں کیا گیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube