Thursday, May 19, 2022  | 1443  شوّال  17

تیری میری ایسی دوستی

SAMAA | - Posted: Jan 12, 2017 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Jan 12, 2017 | Last Updated: 5 years ago

sallo friends

تحریر:ثمیرہ ظفر

بچپن میں چھوٹےدو بھائیوں کااپنے دوستوں کے ساتھ ایک گینگ ہوتا تھا۔ ابّا باہر بیٹھنے کے خلاف تھے، اس لئے گھر کی چھت پرہی سب دوست جمع ہو جاتے، گپ شپ اور تفریح کرتے۔ یہ دوستی اور یاری ایسی تھی کہ دوست کی اماں کو خود بھی امی جان کہتے اور ابّا کو بھی ابّاکہا جاتااورابّاکی غیر موجودگی میں ذراباہر جانے  کا موقع ملا تو نکل لئے۔ ابّا عادت کے ایسے تھے کہ کہیں بچوں کا مخالف گروپ سے پھڈا ہو گیا یا باہر کچھ چوٹ لگ گئی تو اپنے ہی بچوں کی مزید پٹائی کرتے۔اس ٹائم دوست تو ایسے غائب ہوتے ،جیسے گدھے کے سر سے سینگ بھی کیا ہوتے ہوں گےاور اگلے چوبیس گھنٹوں تک کچھ اتا پتا نہ ہوتا کہ کہاں ہیں؟ اسی طرح امتحان کا نتیجہ آتا یا بغیر لائسنس بائیک چلانے پہ چالان کٹ جاتا توخوب شامت لگانا اور موقع سے اگربھائی کا دوست بھی ہاتھ لگ جائے تو ابّا یا اماں بولتے بولتے ایموشنل ہوجاتے اور جگری یاروں سے اپنے ہی بیٹوں کی شکایتیں اور اس ٹائم تو جگری یار ایسے ابّا کی ہر بات میں ہاں میں ہاں ملاتے جیسے خود تو دودھ کے دھلے اور ہمارے ابّا کے آئیڈیل ہوں۔

 اکثر تو ابّاکےذرازیادہ جذباتی ہونے پر سارے راز اگل دیتے اور پکے ابّا کے ایجنٹ بن جاتے،بعد میں آئیں بائیں شائیں کرتے کہ تمہارے ابا کے سامنے اپنی رپورٹیشن بھی تو اچھی رکھنی ،دو تین باتیں سنانے کے بعد دوبارہ سے پکی والی دوستی ہوجاتی۔ یہ دوستی بالکل بےغرض اور بے مطلب ہوتی تھی اور آج بھی قائم ہے۔ دوستی جو سب مفادات سے بالا تر، سیاسی رنگ سے پاک، بھروسہ مند اورخالص ہوتیں۔

get-a-girlfriend-through-facebook-chat

دوستی کے بھی مختلف رنگ ہوتے ہیں بلکہ یوں کہیے کہ اقسام ہوتی ہیں۔دفتری دوست، اسکول کے دوست، محلے کے دوست، انٹرنیٹ کے دوست،دوست کے دوست۔آج کل توسوشل میڈیا فرینڈ شپ کا زیادہ فیشن ہے۔دوستی کی اعلیٰ مثال دیکھنی ہو تو ہمارے سیاستدانوں پر ایک نظر ڈال لیجئے۔ ان سے اچھی دوستی کی مثال اور کہاں ملے گی، جس میں نا صرف ان کی سیاسی ساکھ کو سہارا دیا جاتا ہے بلکہ قیمتی تحائف کا تبادلہ بھی ہوتا ہے ۔ زیادہ دور نا جائیں،آج کل جو چرچہ عام ہے وہ دوستی ہی کی تو بدولت ہے۔ محترم وزیرِاعظم نواز شریف اور قطری شہزادے کی ہی دوستی دیکھئے۔ جناب قطری شہزادے نوازشریف پر ایسے فدا ہوئے کہ لاکھوں ڈالر تحفے میں دے ڈالے جن سے میاں صاحب نے لندن میں خوب جائیداد بنائی۔

funny-fat-kid-with-friends

اس سے پہلے ہمارے سابق صدرپرویز مشرف جنہوں نے کسی انجانی ادا پر سعودی حکومت کا دل جیت لیا اور بدلے میں پائی ڈیڑھ بلین ڈالرزکے گفٹ۔ اب جناب عمران خان اور جہانگیر ترین کی دوستی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں، جو کہ نا صرف پی ٹی آئی کہ بڑے سپورٹر ہیں بلکہ مالی تعاون کے علاوہ اپنے ذاتی طیاروں میں اکثر کپتان کو مفت کی سیر کراتے ہیں۔

بات ہو سابق صدر آصف زرداری کی تو ملک کے مایہ ناز بلڈر ملِک ریاض نے زرداری صاحب کو تحفتہً لاہور کے بحریہ ٹٓاؤن میں 200 کنال کامحل کھڑا کرکےدیاجس کانام بلاول ہاؤس ہی رکھا گیا۔اس کی مالیت پانچ بلین بتائی جاتی ہے۔ اس محل نما گھر میں پرائیوٹ طیارے لینڈ کرنے کے لئے رن وے تک بنایا گیا ہے۔ زرداری صاحب کے علاوہ ملِک ریاض مختلف میڈیا اینکرز کو بھی اکثر بڑے وزنی تحائف سے نوازتے رہتے ہیں۔

بات کی جائے شوبز کی تو اس شعبہ میں دوستیاں اور تحفے تحائف کوئی نئی  بات نہیں۔ اکثر سیاست دان شوبز حسیناؤں سے بڑے متاثر ہوتے ہیں جن میں شیخ رشید کا ذکرنا  کیا جائے تو زیادتی ہوگی جو پہلے انجمن اورپھر ریما پر ایسے فدا ہوئے کہ لاکھوں مالیت کے تحفے دے ڈالے۔

Closeup of happy senior man with friends supporting him

اوپر بیان کی گئی سیاستدانوں کی دوستیاں کتنی پائیدار ہوتی ہیں اور اس کے پیچھے کیا مقاصد ہوتے ہیں؟ میرا خیال ہے سمجھدار لوگوں کو یہ سمجھانے کی ضرورت نہیں۔اگر کھیل کھلاڑی کی بات کی جائے تو یہاں آپ کو بے غرض اور سچی والی دوستی نظر آئے گی جس میں مذہب رنگ نسل سے بالاتر صرف دوستی کی اہمیت ہے۔ جیسے کہ وسیم اکر م اور روی شاستری بہت اچھے دوست ہیں۔ شعیب اختر اور یوراج سنگھ کی دوستی بھی کافی اچھی ہے۔ ایک انڈین شو میں یوراج سنگھ نے بتایا کہ وہ کھیل شروع ہونے سے پہلے اکثرشعیب اختر کو کہتے کہ یار ہاتھ ہلکا رکھنا جب کہ شعیب عادت سے مجبور تھے اور جب میدان میں سامنا ہوتا تو جارحانہ انداز میں بولنگ کرا دیتے۔ٹنڈولکر اور شین وارن کی دوستی بھی مثالی ہے۔

بات کی جائے ہم لڑکیوں کی دوستی کی تو یہ ایک دوسرے کے کپڑے جیولری ادھار لینا۔ اپنی لنچ کی باری پر سموسہ کھلا دینا، امتحانات میں بالکل غائب ہوجانا، زبردست کھانے کی صحیح رسیپی نا بتانااور تو اور اپنی خوبصورت جلد کا راز بھی نا بتانا شامل ہے لیکن پھر بھی ہمیشہ پکے دوست بن کے رہنا ہی ہماری طاقت ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube